♥️💘 اجداد کے نقوش زندہ ہیں ♥️💘

♥️💘 اجداد کے نقوش زندہ ہیں ♥️💘 آج بھی مرے شہر میں آثارِ ہمدردی زندہ ہے مرے اجداد کے اقدار کے نقوش زندہ ہیں کیوں شک کے خنجر...

677 0
677 0

♥️💘 اجداد کے نقوش زندہ ہیں ♥️💘

آج بھی مرے شہر میں آثارِ ہمدردی زندہ ہے
مرے اجداد کے اقدار کے نقوش زندہ ہیں

کیوں شک کے خنجر سے مرا وجود چھلنی ہے
مرے شعور پر پہرہ اور کیوں زبان بندی ہے

مرے اجداد کے لہوں کی خوشبو ابھی زندہ ہے
اُنکی قربانیوں کے سبب ہی یہ وطن پائندہ ہے

خوف و دہشت کے سنگینوں میں ہم زندہ ہیں
طوق غلامی کو توڑ دینے کی ابھی تڑپ زندہ ہے

شفیع اہل ہجرت میں ابھی عشقِ جنون زندہ ہے
ایک نئے وطن کی تحریک ابھی زندہ ہے

تحریر کنندہ ، سید محمد شفیع قادری رضوی

In this article

Join the Conversation